مصر میں عیسائیوں کے دو گرجا گھروں پر سفاکانہ حملہ کی مناسبت سے حضرت آیة اللہ العظمی مکارم شیرازی (دام ظلہ) کا بیان

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ورود کاربران ورود کاربران

LoginToSite

کلمه امنیتی:

یوزرنام:

پاسورڈ:

LoginComment LoginComment2 LoginComment3 .
ذخیره کریں
 
makarem news

معظم لہ کے دفتر کی طرف سے منتشر ہوا :

مصر میں عیسائیوں کے دو گرجا گھروں پر سفاکانہ حملہ کی مناسبت سے حضرت آیة اللہ العظمی مکارم شیرازی (دام ظلہ) کا بیان

مصر کی عظیم عوام کے ساتھ ہمدردی کرتے ہوئے خداوندعالم سے دعا کرتاہوں کہ وہ اس ناگوار سانحہ سے زندہ بچ جانے والے کو صبر جزیل اور زخمیوں کو شفائے کاملہ عنایت فرمائے۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم

مصر کے دو گرجا گھروں پر داعش کی طرف سے خود کش عوامل کے سفاکانہ حملہ کی خبر سن کر بہت افسوس ہوا ۔

افسوس کی بات ہے کہ تکفیری گروہ اور دین کے مخالف لوگ ، اسلام کے نام کو بدنام اور اسلام فوبیاکو رائج کرنے کے لئے روزانہ کسی نہ کسی جگہ جرائم اور خونریزی کرتے ہیں ۔ ایک دن سویڈن میں پیدل چلنے والوں پر حملہ کرتے ہیں اور ایک دن روس کے میٹرو اسٹیشن پر بے گناہ مسافروں کو خاک و خون میں غلطاں کرتے ہیں اور اب مصر کے مختلف شہروں میں عیسائیوں کے عبادت گھروں میں حملہ کر رہے ہیں ۔

ہم نے متعددبار کہاہے کہ تشدد اور دہشت گردی کی اس لہر سے نجات حاصل کرنے کے لئے دنیا کے دینی رہبروں اور حکومت کے عہدیداروں کو مصمم ارادہ کرنا ہوگا کہ وہ تکفیروں سے برائت کرتے ہوئے ان کی حمایت نہ کریں ، لیکن افسوس کہ آج کی دنیا میں ایسا ارادہ دکھائی نہیں دے رہا ہے ۔

مصر کی عظیم عوام کے ساتھ ہمدردی کرتے ہوئے خداوندعالم سے دعا کرتاہوں کہ وہ اس ناگوار سانحہ سے زندہ بچ جانے والے کو صبر جزیل اور زخمیوں کو شفائے کاملہ عنایت فرمائے۔


تاریخ انتشار: « 2017/4/14 »
Tags
معظم لہ کی طرف سے زکات فطرہ کا اعلان

معظم لہ کے دفتر کی طرف سے اعلان :

معظم لہ کی طرف سے زکات فطرہ کا اعلان

آل سعود اپنے ملک کے باشندوں کی حفاظت کرنے سے عاجز ہیں

سعودی عرب کے جرائم کی مذمت میں معظم لہ کا بیان

آل سعود اپنے ملک کے باشندوں کی حفاظت کرنے سے عاجز ہیں

آل سعود حرمین شریفین کے انتظامات کی صلاحیت نہیں رکھتے

معظم لہ نے فقہ کے درس خارج میں فرمایا :

آل سعود حرمین شریفین کے انتظامات کی صلاحیت نہیں رکھتے

CommentList
*متن
*حفاظتی کوڈ غلط ہے. http://makarem.ir
قارئین کی تعداد : 2253